Breaking

Search Here Anything

Tuesday, July 30, 2019

نورپور تھل کا شخص رشوت لیتے ہوے رنگے ہاتھوں پکڑا گیا۔


کرپٹ مافیا کے خلاف اینٹی کرپشن سرگودھا کی تابٹر تور 
کاروائیاں جاری۔




محکمہ اینٹی کرپشن خوشاب نے محمد ناصر، ریڈر نائب تحصیلدار نورپورتھل کورشوت لیتے ہوئے رنگے ہاتھوں 


گرفتارکر لیا۔





ڈائریکٹر اینٹی کرپشن سرگودھا کے حکم پرضرار احمد، سرکل آفیسر، اینٹی کرپشن خوشاب نے ریڈ کر کے ملزم محمد ناصر، ریڈر نائب تحصیلدار نورپور تھل کو رشوت لیتے ہوئے رنگے ہاتھوں ڈھر لیا۔



ملزم نے اراضی کی تقسیم کے لیے رشوت مانگی تھی۔
رواں ماہ جولائی میں اینٹی کرپشن نے محکمہ مال کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر لینڈ ریکارڈ منکیرہ سمیت 3اہلکاروں کو رشوت لیتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار کیا۔



تفصیلات کے مطابق محمد رمضان سکنہ نورپورتھل نے محمدشہباز حسین شاہ، ریجنل ڈائریکٹر اینٹی کرپشن سرگودھا کواطلاع دی کہ تحصیل نور پور تھل میں محکمہ مال کے افسران و اہلکاران نے رشوت کا بازار گرم کیا ہوا ہے،سائل نے اپنی اراضی کی تقسیم کے لیے تحصیل آفس نورپور تھل گیا جہاں پر نائب تحصیلدار نورپور تھل کا ریڈر محمد ناصرنے تقسیم اراضی کے لیے بندہ سے رشوت کا مطالبہ کیا ہے۔ جس پر ریجنل ڈائریکٹوریٹ اینٹی کرپشن سرگودھا کی خصوصی ٹیم نے کہا کہ آپ ریڈر کو رشوت نہ دیں بلکہ اُسے رشوت دیتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار کروائیں، اینٹی کرپشن سرگودھا کی خصوصی ٹیم کی کاوشوں سے



 مدعی مقدمہ محمد رمضان ملزم محمد ناصر، ریڈر نائب تحصیلدار نورپور تھل پر ریڈ کروانے کے لیے راضی ہو گیا۔جس پر محمدشہباز حسین شاہ، ریجنل ڈائریکٹر اینٹی کرپشن سرگودھا نے ضرار احمد، سرکل آفیسر، اینٹی کرپشن خوشاب کو ریڈ کرنے کا حکم دیا، ریڈنگ آفیسر نے ریڈنگ ٹیم کے ساتھ مل کر جوڈیشل مجسٹریٹ حسنین احمد انورصاحب کی نگرانی میں ریڈ کیااور 


دوران ریڈ ملزم محمد ناصر، ریڈر، نائب تحصیلدار نورپور تھل کورشوت لیتے ہوئے رنگے ہاتھوں گرفتار کر لیا اور رشوت کی رقم مبلغ10ہزار روپے موقع سے برآمد کر کے ملزم کے خلاف مقدمہ نمبر12/2019تھانہ اینٹی کرپشن خوشاب میں درج کرلیا گیا۔ ملزم سے مزیدتفتیش جاری ہے۔



this content is copied from the other site and get permissioned by the author.